مضبوط معیشت خوشحال اورمستحکم پاکستان کی علامت ہے، نعیم صدیقی

پاکستان کی ترقی اور قوم کی خوشحالی کیلئے معیشت کو مضبوط بنیادوں پر استوار کرنا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔وفاقی حکومت کی جانب سے کراچی کیلئے ایک ہزار ارب روپے سے زائد پیکیج کا اعلان یہ ظاہر کرتا ہے کہ حکومت ملک کی معیشت کو مضبوط بنانے میں سنجیدہ ہے۔کراچی پاکستانی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی جیسی اہمیت کا حامل ہے حالیہ بارشوں اور کورونا وائرس کی وجہ سے اس شہر بے مثال کا جو نقصان ہوا ہے اس کا ازالہ بہت ضرور ی ہے۔اس بات پر پاکستان کے تمام ادارے اور سیاسی جماعتیںمتفق ہیں کہ کراچی کے انفرا اسٹرکچر کو بہتر کرنا ناگزیر ہو گیا ہے۔حکومت کی جانب سے یہ یقین دہانی معیشت کیلئے بہت ہی مثبت اشارہ ہے کہ حکومتی ادارے ایسی کوئی چیز نہیں کریں گے کہ اس کی وجہ سے کاروبار اور تجارت پر جان بوجھ کر اضافی بوجھ ڈالا جائے حقیقت یہ ہے کہ اس وقت پاکستان کو معاشی سرگرمیاں بڑھانے کی شدید ضرورت ہے کیونکہ اس بات پر تمام معاشی مہرین کا اتفاق ہے کہ مضبوط معیشت ہی پاکستان کی ترقی و خوشحالی اور استحکام کی علامت ہے۔
حکومت کو چاہئے پاکستان کو ترقی کے سفر میں آگے لیجانے اورملک میں سرمایہ کاری کے فروغ کے لیے نئے اور قابل عمل طریقہ کار اپنائے جائیں۔جدید کاروبار کیلئے کاروباری طبقے کی مدد اور رہنمائی کی جائے کیونکہ پاکستان کی معیشت مضبوط ہوگی تو ملک کے اندر استحکام ہوگا اور عوام کئلیے روزگار کے ذرائع پیدا ہوں گے۔
یہ حقیقت ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے ملک کے طول و عرض میں بیشمار لوگوں کے روزگار شدید متاثر ہوئے ہیں معیار زندگی پر اثرات مرتب ہوئے ہیں لیکن اللہ کا شکر ہے کہ اب کورونا وائرس کے خطرات سے ہم باہر نکل آئے ہیں۔، معیشت کی ترقی کے لیے کراچی کو اولین ترجیع دینا ہوگی اور اس شہر کے انفرا اسٹرکچر کو نہایت اخلاص کے ساتھ سب کو مل کر بہتر کرنا ہوگا، وفاقی حکومت کی جانب سے کراچی کو ایک ہزار ارب روپے سے زائد کا پیکج اس لیے دیا گیا تاکہ وہاں کے لاکھوں لوگوں کی زندگی میں آسانیاں پیدا ہوں اور ان کی مدد کی جا سکے۔ کورونا وائرس سے پانچ مہینوں کا جو شدید مالی نقصان ہوا ہے اس پر قابو پانے کیلئے کچھ وقت لگ سکتا ہے۔اب ہمت،کوشش اور محنت کے ساتھ اس سے آگے بڑھنے میں بھی کچھ عرصہ درکار ہوگا۔، پاکستان میںبیروزگاری کا خاتمہ اسی صورت ممکن ہے کہ جب کاروبار اور تجارت سے وابستہ لوگ سرمایہ کاری کریں گے۔ یہ بات بہت خوش آئند ہے کہ حکومت نے تعمیرات کے شعبے میں زیادہ ترٹیکس بڑی حد تک کم کردیے ہیں،یہ بات کہی جا سکتی Economy of Pakistan, an overview / April 2020 #pakistan #economy #pakistaneconomy2020 - YouTubeہے کہ حکومت کی اقتصادی پالیسیوں کی وجہ سے معاشی حالات میں بہتری آ رہی ہے۔
اس وقت بین الاقوامی سطح پر سود کی شرح کم ہے، اگر حکومت کو قرض لینا ہی ہے تو یہ قرض بین الاقوامی سطح پر لیے جائیں۔اگر پاکستان کے ذمہ قرض کم کرنے ہیں تو اس کے لیے لازم ہے کہ حکومت کے اخراجات کم کرنے ہوں گے، ڈالر کی جب تک اہمیت اور افادیت ہے اس وقت تک ڈالر کی آمدن کے بغیر لوگوں کے حالات میں خوشگوار اور مثبت تبدیلی کا آنا ممکن دکھائی نہیں دیتا۔ پاکستان میں وسائل اور اللہ کے انعامات کی کوئی کمی نہیں ہے۔ بے شمار ذرائع موجود ہیں اس لیے ضروری ہے کہ ریاست کے تمام ادارے باہم متحد ہو کر ماضی کے مقابلے میں بہتر کارکردگی دکھانے کے لیے اپنا اپنا کردار ادا کریں۔پاکستان کی تاجر برادری ملک کی ترقی اور خوشحالی میں تاریخ ساز کردار ادا کر سکتی ہے۔اس کیلئے حکومت کو چاہئے کہ تجارت سے وابستہ لوگوں کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کی جائیں اور ان کے کاروبار میں درپیش پیچیدگیوں کو ختم کیا جائے۔حکومت کا بنیادی کام اچھی اور قابل عمل پالیسیاں بنانے کے ساتھ ساتھ معاشرے سے کرپشن اور بدانتظامی کو ختم کرنا ہوتا ہے۔ قانون اور قواعد کی پاسداری یقینی بنانا بھی حکومت کا کام ہے۔
جنگ عظیم دوئم کے بعد ہم دیکھتے ہیں کہ دنیا کے تقریبا تمام ممالک ایک جیسی خستہ حالت کا شکار تھے تاہم اب دیکھا جائے توکسی ملک کی فی کس آمدنی کئی ہزار ڈالر تک جا پہنچی ہے جبکہ ایسے ملک بھی ہیں جہاں غربت بڑھتی جا رہی ہے۔ اس کی بنیادی وجہ کرپشن اور بدانتظامی ہے۔کسی کی ترقی و خوشحالی اور کسی کی تنزلی ایسی چیزیں ہیں جن سے ہم بہت کچھ سیکھ کر آگے بڑھ سکتے ہیں۔ جن ممالک نے اپنے لوگوں پر سرمایہ کاری کی ہے انہوں نے ہی ترقی اور خوشحالی کی منزل کو پایا ہے۔ دنیا میں کوئی بھی حکومت کاروبار نہیں چلا سکتی اور نہ ہی حکومت کا کام تجارت کرنا ہوتا ہے۔ اس کے لیے لازم ہے کہ صنعت و تجارت سے وابستہ افراد آگے آئیں اور ملک کی ترقی میں تاریخ ساز کردار ادا کریں۔کسی بھی ملک کی ترقی کیلئے ضروری ہے کہ وہ دنیا کے دوسرے ممالک کے ساتھ تجارت اور سرمایہ کاری کرے۔اس حوالے سے ہم یہ کہہ سکتے ہیں کہ اسٹاک مارکیٹ کا کردار بہت اہم ہے اس لیے ہماری یہ کوشش ہونی چاہیے کہ ہماری اسٹاک مارکیٹ، شفاف اور دنیا کیلئے ایک مثال بن کر پاکستان کیلئے فخر کا باعث بن جائے۔حکومت کی جانب 200 ارب روپے کا انرجی سکوک بہت بڑا اور اہم قدم ہے جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ حکومت نئے اور مثبت تجربات کی روشنی میں پاکستان کی معیشت اور تجارت کو بلندی کی جانب لے جانا چاہتی ہے۔

Leave a Reply

*