معاشی بحالی کیلئے ایشیائی ترقیاتی بینک کی 10 ارب ڈالر امداد،نعیم صدیقی

ایشیائی ترقیاتی بینک کی جانب سے پاکستان کو آئندہ 5 سال کے دوران معاشی بحالی کے عمل کے لیے معاونت کے تحت 10 ارب ڈالر کی رقم فراہم کی جائے گی۔جس کا بنیادی مقصد حکومت کے اصلاحاتی ایجنڈے کی حمایت اور زبوں حال معیشت کی بحالی کے علاوہ توانائی کے منصوبوں میں مدد فراہم کرنا ہے۔ گذشتہ دنوں وفاقی وزیر معاشی امور مخدوم خسرو بختیار اور اے ڈی بی کے نائب صدر شیزن چین کے درمیان ورچوئل اجلاس میں بات چیت کے بعد یہ فیصلہ کیا گیا تھا کہ پاکستان کو دس ارب ڈالر کی رقم فراہم کی جائے گی جس کا بنیادی مقصد پاکستان میں مسائل کا شکار معیشت کو بہتری کی جانب گامزن کرنا ہے۔اس اجلاس میں سیکریٹری معاشی امور ڈویژن نور احمد اور اے ڈی بی کے کنٹری ڈائریکٹر نے بھی شرکت کی تھی جن کا کہنا ہے کہ ایشین بنک کی یہ امداد پاکستان میں معیشت کی بہتری میں اہم کردار ادا کرے گی اور پاکستان کورونا وائرس سے شدید متاثر ہونے کے بعد بحالی کی جانب گامزن ہو سکے گا۔اس میٹنگ میں کنٹری پارٹنرشپ اسٹریٹیجی سی پی ایس 2021-2025کی اہم ترجیحات پر تبادلہ خیال کیا گیا جس کا جنوری میں اے ڈی بی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ذریعے منظوری کیے جانے کا امکان ہے۔اجلاس میں پاکستان کے اصلاحاتی پروگرام کے لیے اے ڈی بی کی جاری حمایت پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

پاکستان میں کورونا وائرس کی وجہ سے پیدا ہونے والے معاشی اور معاشرتی چیلنجز اور پاکستان کے اسٹرکچرل چیلنجز سے نمٹنے کے لیے دونوں فریقین نے سی پی ایس 2021-25 کو حتمی شکل دی ہے جس کے نتیجے میں پاکستان میں تعمیر وترقی اور خوشحالی کے امکانات میں اضافہ ہوگا۔ آئندہ پانچ سالوں میں اے ڈی بی کی امداد تین اہم باہم مربوط ستونوں پر مرکوز ہوگی جس میں، معاشی انتظامات میں بہتری، لچک پیدا کرنا اور مسابقت اور نجی شعبے کی ترقی کو فروغ دینا شامل ہے۔اے ڈی بی کی جانب سے دئے جانے والے کل فنڈز کا تقریبا 33 فیصد توانائی کے شعبے پر مرکوز ہوگا۔ایک سرکاری بیان کے مطابق اے ڈی بی کے شیزن چین نے کورونا وائرس سے کامیابی سے نمٹنے کے لیے حکومت کی حکمت عملی کو سراہا۔اس بات میں کوئی شک نہیں کہ پاکستان نے کورونا وائرس کی وبا سے نمٹنے کیلئے جو کردار ادا کیا اور جس طرح حفاظتی انتطامات کئے گئے ہیں ان کی وجہ سے پاکستان کے عوام دنیا کے دیگر ممالک سے بہت بہتر پوزیشن میں ہیں۔ورنہ ہم دیکھتے ہیں کہ ساری دنیا ابھی تک کورونا وائرس کی وجہ سے شدید مالی ،معاشی اور صحت کے مسائل سے دوچار ہے۔شیزن چین کی جانب سے حکومت کے مثبت اقدامات کی تعریف کی گئی اور انھوں نے حکومت کے اصلاحاتی ایجنڈے کی حمایت کرنے کے ساتھ ساتھ پاکستان میں معاشی بحالی کے عمل کو تیز کرنے کے لیے بینک کے عزم کا اعادہ کیا۔ان کا کہنا تھا کہاے ڈی بی اپنے نئے سی پی ایس کے تحت پاکستان کو اگلے 5 سالوں میں مختلف ترقیاتی منصوبوں اور پالیسی پر مبنی پروگراموں کے لیے تقریبا 10 ارب ڈالر کی امداد فراہم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ایشین ڈیولپمنٹ بنک کی جانب سے مشکل معاشی حالات میں جو امداد کی جا رہی ہے یہ پاکستان کی معیشت کو ترقی کی جانب لیجانے میں معاون ثابت ہو گی اور ہمارے ہاں جو بڑے بڑے منصوبے جن میں توانائی کے اہم ترین منصوبے شامل ہیں ان کو مکمل کرنے میں آسانی پیدا ہوگی۔

اس کے علاوہ جب پاکستان کورونا وائرس سے شدید متاثر تھا تو اس کے فوری بعد کورونا وبا کے دوران بھی ایشیائی ترقیاتی بینک کی جانب سے کووڈ 19 وبا سے پیدا ہونے والے منفی معاشی اور معاشرتی اثرات کو کم کرنے کی غرض سے پاکستان کے لیے 50 کروڑ ڈالر قرض کی منظوری دی گئی تھی۔یہ قرض معاشرتی تحفظ کے پروگرام سمیت صحت کے شعبے کی صلاحیتوں کو بڑھانے اور روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے۔اے ڈی بی کے صدر مساتسوگو آسکاوا نے اس بات کو تسلیم کیا کہ کووڈ 19 نے پاکستان کو بری طرح متاثر کیا ہے۔انہوں نے اس مشکل دور میں پاکستان کے ساتھ مکمل تعاون کے لیے اپنے عزم کا اظہار کیا تھا۔اے ڈی بی کے صدر کا کہنا تھا ہمارے پروگرام کی مدد سے پاکستان کی حکومت مختلف شعبوں کی استعداد کار بڑھا سکتی ہے جس میں معاشرتی تحفظ اور صحت کے شعبے شامل ہیں۔اے ڈی بی کے اعلامیے کے مطابق اے ڈی بی کووڈ 19 ایکٹیو رسپانس اینڈ ایکسپینڈیچرسپورٹ پروگرام سے پاکستان کو مختلف منصوبے چلانے میں مدد دی گئی ہے جس میں 30 لاکھ یومیہ اجرت والے مزدوروں کو نقد امداد کی ادائیگی اور سماجی کفالت کے تحت 75 لاکھ خاندانوں کو نقد گرانٹ شامل ہے۔ ایشین بنک کے اس پروگرام کی بدولت پاکستان کے طبی عملے کے لیے خصوصی لباس اور وینٹی لیٹرز حاصل کئے گئے ہیںجس میں خواتین کے لیے مناسب سائز کے ذاتی حفاظتی سامان اور دیگر متعلقہ سازو سامان بھی شامل ہیں۔ صحت کے علاوہ اے ڈی بی کے اس مالی پروگرام سے کاروباری نوجوان طبقہ خصوصا 25 فیصد خواتین کو سرکاری اسکیموں بشمول ‘کامیاب جوان پروگرام’ کے ذریعے معاونت کی جا رہی ہے۔واضح رہے کہ ورلڈ بینک سیکیورینگ ہیومن انوسٹمنٹ ٹو فوزٹر ٹرانسفورمیشن اور ایشین انفرا اسٹرکچر انویسٹمنٹ بینک کی جانب سے بھی 50-50 کروڑ ڈالر پر مشتمل پروگرام کے ساتھ اے ڈی بی کے سی اے آر ای ایس پروگرام کورونا وائرس کے تناظر میں استعمال کیا جارہا ہے۔
قومی رابطہ کمیٹی برائے غیر ملکی فنڈڈ منصوبے کی جانب سے تشویش ظاہر کی گئی ہے کہ توانائی کے شعبے میں 14 میں سے 8 منصوبے مسائل پیدا کر رہے ہیں۔کسی حد تک اطمینان کی بات ہے لیکن ان کی تکمیل بہت ضروری ہے ۔ان منصوبوں کے لیے غیر ملکی قرض دینے والی ایجنسیوں اور دوطرفہ قرض دہندگان کے ذریعے مجموعی 3 ارب 42 کروڑ ڈالر فنڈز حاصل ہونے تھے تاہم متعلقہ حکام کی جانب سے سست پیشرفت کی وجہ سے 3 ارب 3 کروڑ ڈالر سے زائد کی رقم فراہم نہیں کی جاسکی ہے ۔

یہ ایسے وقت میں ہوا ہے جب پاکستان کو بیلنس آف پیمنٹ کی حمایت میں غیر ملکی فنڈز کے بہا ئوکی اشد ضرورت ہے۔ایشین ڈیولپمنٹ بینک، ورلڈ بینک، اسلامک ڈیولپمنٹ بینک، جاپان، فرانس، جرمنی اور امریکا کے مالی تعاون سے بجلی کے شعبے کے ترقیاتی منصوبوں کی پیشرفت کا جائزہ لینے کے لیے طلب کیے گئے اس اجلاس میں شریک ایک سینئر سرکاری عہدیدار کا کہنا تھا کہ وعدے کے مطابق پورٹ فولیو کے خلاف کل ترسیل 10 فیصد سے تھوڑا سا اوپر ہیں کیونکہ 3 ارب 40 کروڑ روپے میں سے صرف 37 کروڑ 30 لاکھ ڈالر استعمال کیا گیا ہے، اس سے ڈونر برادری کے درمیان ہماری ساکھ متاثر ہورہی ہے۔امید کی جانے چاہئے حکومت اس جانب مکمل سنجیدگی کے ساتھ توجہ دیتے ہوئے ملک کو درپیش معاشی چیلنجز سے عہدہ برآ ہونے میں کردار ادا کرے گی۔عالمی مالیاتی اداروں اور ترقی یافتہ ممالک کی جانب سے دی جانے والی امداد اور قرضوں کا استعمال ملک اور قوم کے بہترین مفاد میں کیا جائے گا۔اس بات کا خاص خیال رکھا جانا لازم ہے کہ جو ادارے اور ممالک پاکستان کو امداد دیتے ہیں یا مشکل وقت میں قرضے دیتے ہیں ان کا اعتماد بحال رکھنا اور رقوم و وسائل جس مقصد کیلئے حاصل کیے جاتے ہیں ان پر سچی لگن کے ساتھ کام کرناوقت کی ۔اہم ترین ضرورت ہے۔

займ онлайн https://credit-n.ru/offers-zaim/zaymigo/index.html онлайн займы https://credit-n.ru/order/zaymyi-srochno-dengi-leads.html hairy woman https://credit-n.ru/kreditnye-karty.html https://credit-n.ru/kredit/kredit-interprombank.html https://credit-n.ru/offer/kredit-nalichnymi-probusinessbank.html быстрые займы на карту быстрые займы на карту займ на карту с плохой историейзайм денег на картуонлайн займ на карту сбербанка деньги онлайн займ на кивидает займвзять займ онлайн быстрые смс займы займ онлайн без работызайм онлайн без кизайм экспресс екатеринбург займ на карту сбербанка без процентовзайм онлайн на карту срочно без отказа круглосуточночестное слово займ личный кабинет взять займ на карту с 18 летвзять займ со 100% одобрениемполучить займ на карту сбербанка займ первый раз без процентовзайм по 0займ до зарплаты челябинск займ у частного лица москваполучить займ на яндекс деньгимфо лайм займ займ миллион рублейзайм без процентов на карту мгновенно круглосуточно без отказазайм на чужую карту квики займ на картучастный займ в санкт петербургеудобный займ займ экспресс нижневартовске заем второй займгде взять займ без процентов займ без паспортных данных на картузайм на карту 500 рублейзайм на карту рейтинг

وٹس ایپ کے ذریعے خبریں اپنے موبائل پر حاصل کرنے کے لیے کلک کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں